عوام کے لیے بڑی خوشخبری۔۔۔امریکی تعاون سے بڑے منصوبے کا افتتاح کر دیا گیا

0

لاہور(ویب ڈیسک)امریکی تعاون سے پاٹرنڈ پن بجلی گھر منصوبہ سے بجلی ترسیل کے منصوبے کا افتتاح کر دیا گیا ۔ جاری اعلامیہ کے مطابق نیشنل ٹرانسمیشن اینڈ ڈسپیچ کمپنی مینجنگ ڈائریکٹر نے پاٹرنڈ توانائی ترسیل منصوبہ کا افتتاح کیا ، منصوبے سے قومی توانائی گرڈ میں 147 میگاواٹ پن بجلی کی شمولیت کا اضافہ کرے گی ،


امریکی ادارہ برائے بین الاقوامی ترقی کے توسط سے آزاد کشمیر اور خیبرپختونخوا کے خطہ میں بجلی کی ترسیل کی لائنوں کی تعمیر اور گرڈ اسٹیشنوں کی تعمیر کی گئی ۔یو ایس ایڈ مشن ڈائریکٹر جْولی کوئنین کے مطابق این ٹی ڈی سی اور یو ایس ایڈ کی سرمایہ کاری سے پاٹرنڈ منصوبے سے قومی گرڈ کو بجلی فروخت کررہا ہے ۔ حکومت پاکستان کےجاری کردہ اکنامک سروے آف پاکستان برائے مالی سال 20-2019 کے مطابق پاکستان میں بجلی پیدا کرنے کی صلاحیت 35000 میگاواٹ سے زائد ہے۔ تاہم پاکستان میں بجلی کی کھپت دس ہزار سے چوبیس ہزار میگاواٹ کے درمیان رہتی ہے جس کی طلب موسم اور دوسری وجوہات سے منسلک ہے۔بجلی پیدا کرنے والی کمپنیوں کی جانب سے پیدا کی جانے والی ضرورت سے زائد بجلی کا استعمال نہ ہونے کے باوجود حکومت ان بجلی کمپنیوں کو ادائیگی کی پابند ہے تو دوسری جانب تیل کے ذریعے بجلی پیدا کرنے والی کمپنیاں اگر بجلی پیدا نہیں بھی کرتیں تو پھر بھی حکومت کی جانب سے انھیں ان کی پیداواری صلاحیت کے مطابق رقم فراہم کی جاتی ہے۔تیل کے ذریعے بجلی پیدا کرنے والے ان کارخانوں کو بجلی استمعال نہ کرنے کے باوجود ادائیگی پاکستان کے حکومتی خزانے اور عوام پر بوجھ ہے۔ ملک میں سستے ذرائع پانی، ہوا ، کوئلے وغیرہ سے پیدا ہونے والی بجلی کا صارفین کو خاطر خواہ فائدہ حاصل نہیں ہوتا کیونکہ تیل سے پیدا ہونے والی مہنگی بجلی کی خریداری اور اس کا استعمال نہ ہونے کے باوجود ادائیگی بجلی کے نرخوں میں کمی نہیں لا رہے۔
توانائی کے شعبے کے ماہرین کے مطابق بجلی پیدا کرنے والی کمپنیوں کی بجلی پیدا کرنے کی استعداد پر حکومت کی جانب سے ادائیگی توانائی کے شعبے میں ایک بہت بڑا مسئلہ ہے۔ ان کے مطابق بجلی پیدا کرنے کی استعداد پر ادائیگی کی وجہ سے پیدا ہونے والے قرضے کی مالیت ایک ٹریلین روپے تک پہنچ چکی ہے جو ملک کے توانائی کے شعبے پر بہت بڑا بوجھ ہے۔








شیئر کریں

Leave A Reply

Your email address will not be published.