”عورت کس وقت قربت کیلئے بے تاب ہوتی ہے

0

آج ہم آپ کو بتانے والے ہیں کہ عورت کے کونسے خاص دن خاص ایام ہوتے ہیں کہ عورت قربت کیلئے بے تاب ہوتی ہے ۔ عورت قربت کی ایک لہر اُٹھتی ہے وہ کونسا وقت ہوتا ہے ۔

مہینے میں کچھ دن میں ایساوقت آتا ہے کہ جس میں عورت کی خواہش بہت زیادہ ہوتی ہے اس صورت میں مرد کو چاہیے کہ ایسے وقت کو سمجھنے کی کوشش کرے

اور اس وقت خواہش وہ ضرور پورا کیا کرے اس سے محبت بھی بڑھے گی اور لطف بھی خوب آئیگا اور دونوں کو سکون بھی آئیگا اور محبت میں اضافہ ہوگا ۔

جس میاں بیوی میں یہ تعلق کمزور ہو تو ان میں ہمیشہ لڑائی جھگڑے وغیرہ رہتے ہیں۔

تو وہ عاملوں سے شکایت کرتے ہیں کہ ہمارے گھر میں جھگڑا رہتا ہے اس میں اصل مقصد پورا نہیں ہوتا ۔

یا تو کبھی مرد کا پورا نہیں یا عورت کاقربت میں لطف اندوز نہیں ہوپاتے ۔یہ بات بہت زیادہ یاد رکھنی چاہیے کہ عورت کو بقول اتباء اس کو بارہا آزمایا بھی گیا ہے کہ ہر مہینے میں ایک یا

دو مرتبہ بعض عورتوں کو حیض سے پہلے اور بعض کو حیض کے بعد قربت کی ایک خاص لہر اُٹھتی ہے اور بہت بے تاب ہوتی ہے

مگر فطری حیاء کے سبب زبان سے کچھ کہنے کے بجائے وہ اپنے اطوار انداز سے اظہار کرتی ہے ۔ عورت پر حیاء بہت زیادہ غالب ہے۔

اپنی زبان سے کچھ نہیں کہہ سکتی لیکن اپنی کیفیات سے اپنے انداز کچھ ایسے کام کرتی ذہین مرد ہوتے ہیں

ان کو سمجھنا چاہیے کہ اس وقت سمجھیں اور اس وقت عورت کی خواہش ضرور پورا کریں اس سے ان دونوں کے درمیان محبت بڑھے گی

اور دونوں کو لطف سکون اور خوشی بھی بڑھے ایسے اوقات کو ضائع کرکے اس کی شہوت ٹھنڈی ہونے پر اس کو چرنا وہ پھر عام بات ہوجاتی ہے ۔

یہ حقیقتاً ایسی بات ہے کہ اس حالات میں میاں بیوی دونوں کو ایک دوسرے کو سمجھنا چاہیے ۔

ہم نے آپ کو بتایا دیا کہ اکثر ایک دوسرے شکایت کرتے رہتے ہیں ۔پھر ایک دوسرے سے گلے شکوے کے سبب گھر ٹوٹ جاتے ہیں

۔ مہینے کے بعد حیض کے بعد قربت کی بہت خاص لہر اُٹھتی ہے اس وقت اسکو ضرور پورا کرنا چاہیے۔

شیئر کریں

Leave A Reply

Your email address will not be published.